Ministry Of Information And Broadcasting Jobs 2022

حکومت پاکستان نے خالی آسامیوں کو پر کرنے کے لیے قابل، متحرک اور تجربہ کار پیشہ ور افراد کی خدمات حاصل کی ہیں۔ وہ باصلاحیت اور تجربہ کار لوگوں کی تلاش میں ہیں جن کے پاس مضبوط تعلیمی اسناد اور/یا درج ذیل شعبوں میں پیشہ ورانہ تجربہ ہے:

ہم نے یہ وزارت اطلاعات و نشریات کی نوکریاں 2022 ڈیلی ایکسپریس سے جمع کیں۔ پاکستان میں درخواست دہندگان ان آسامیوں کے لیے درخواست دے سکتے ہیں۔ پیشہ ور کھلاڑیوں کو ایک مقررہ تنخواہ پیکج کی پیشکش کی جائے گی۔ سالانہ معاہدے کی مدت ایک سال ہے۔

وزارت اطلاعات و نشریات کی نوکریاں 2022

پوسٹ کیا گیا: 6 جولائی 2022
ملازمت کا مقام: اسلام آباد
تعلیم: بیچلر، ماسٹر
آخری تاریخ: 20 جولائی 2022
کل آسامیاں: 08
ڈیاپارٹمنٹ: وزارت اطلاعات و نشریات
پتہ: سیکشن آفیسر ای آئی، وزارت اطلاعات و نشریات، کمرہ نمبر 4153، چوتھی منزل، کیبنٹ بلاک، اسلام آباد

اطلاعات و نشریات کی وزارت ایک ویڈیو ایڈیٹر، ڈیجیٹل ویڈیو گرافر، اور نان لائنر ایڈیٹر کی خدمات حاصل کر رہی ہے۔ یہ پوسٹ میرٹ کوٹہ کے خلاف نہیں ہے۔

درخواست کی فیس روپے ہے۔ ہر درخواست دہندہ کے لیے 200/- اور رجسٹریشن فیس 100/- فی شخص ہے۔

آپ متعلقہ فیلڈ کے تجربے کے ساتھ درخواست دے سکتے ہیں جیسے کہ آئی ٹی، میڈیا اسٹڈیز، جرنلزم، کمیونیکیشن، بزنس ایڈمنسٹریشن، انگلش، ایڈیٹنگ، ویڈیو گرافی، فائن آرٹس، فلم یا کمپیوٹر آرٹس۔

درخواست دینے میں دلچسپی رکھنے والوں کو وزارت اطلاعات و نشریات یا اس سے منسلک کسی بھی محکمے میں کام کرنے کا تجربہ ہونا چاہیے۔

اگر آپ موجودہ امیدوار ہیں، تو آپ کو اپنا درخواست فارم مناسب چینل کے ذریعے حکومت کو جمع کروانا ہوگا۔

وزارت اطلاعات و نشریات کی نوکریاں 2022 کے لیے کیسے اپلائی کریں؟

کوئی بھی شخص جو JEE مین کے لیے درخواست دینے کا اہل ہے اسے NJP کی ویب سائٹ www.njp.gov.pk پر آن لائن فارم پُر کرنا چاہیے۔

دلچسپی رکھنے والے امیدواروں کو تعلیمی قابلیت/ڈگری اور تجربہ کے سرٹیفکیٹ کے ساتھ ایک پرنٹ شدہ آن لائن بھرا ہوا فارم سیکشن آفیسر (EI)، وزارت اطلاعات و نشریات، کمرہ نمبر 4153، 4th فلور، کیبنٹ بلاک، اسلام آباد کو بھیجنا چاہیے۔

تمام درخواستیں اخبار میں اس اشتہار کی تاریخ کے 15 دنوں کے اندر دیے گئے پتے پر پہنچ جانی چاہئیں۔

وزارت اطلاعات و نشریات کی نوکریاں 2022
وزارت اطلاعات و نشریات کی نوکریاں 2022



پوسٹ کے ملاحظات:
2

Leave a Comment